top 20 mirza ghalib poetry

top 20 mirza ghalib poetry

top 20 mirza ghalib poetry

آہ کو چاہیئے اک عمر اثر ہوتے تک

کون جیتا ہے تری زلف کے سر ہوتے تک

بازیچۂ اطفال ہے دنیا مرے آگے

ہوتا ہے شب و روز تماشا مرے آگے

بسکہ دشوار ہے ہر کام کا آساں ہونا

آدمی کو بھی میسر نہیں انساں ہونا

درد منت کش دوا نہ ہوا

میں نہ اچھا ہوا برا نہ ہوا

ہیں اور بھی دنیا میں سخن ور بہت اچھے

کہتے ہیں کہ غالبؔ کا ہے انداز بیاں اور

ہم کو معلوم ہے جنت کی حقیقت لیکن

دل کے خوش رکھنے کو غالبؔ یہ خیال اچھا ہے

ہزاروں خواہشیں ایسی کہ ہر خواہش پہ دم نکلے

بہت نکلے مرے ارمان لیکن پھر بھی کم نکلے

عشرت قطرہ ہے دریا میں فنا ہو جانا

درد کا حد سے گزرنا ہے دوا ہو جانا

mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry


mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry


mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry


mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry


mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry mirza ghalib poetry


mirza ghalib poetrytop 20

You may also like...

1 Response

  1. February 4, 2019

    […] top 20 mirza ghalib poetry […]

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *